حکومت کا پی ٹی آئی قیادت کیخلاف کارروائی کا فیصلہ ،کارروائی پولیٹکل پارٹی آرڈر 2022 کے تحت کی جائے گی، جلد ڈیکلریشن تیار کرکے سپریم کورٹ بھیجا جائےگا، وزیر اطلاعات

05 اگست ، 2022

اسلام آباد(جنگ نیوز)وفاقی کابینہ نے ممنوعہ فنڈنگ کے معاملے پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی قیادت کے خلاف پولیٹکل آرڈر2002کے تحت کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ جبو نیوز کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کےفیصلے کی روشنی میں آئندہ لائحہ عمل پر مشاورت کی گئی۔اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ میں وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے بتایا کہ کابینہ نے ممنوعہ فنڈنگ کے معاملے پر پی ٹی آئی قیادت کے خلاف پولیٹیکل پارٹی آرڈر 2002کے تحت کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ مریم اورنگزیب نے بتایا کہ پی ٹی آئی قیادت کےخلاف پولیٹکل پارٹی آرڈر 2002 کے آرٹیکل 2، 6 ،15 اور17کے تحت کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے، تحریک انصاف غیر ملکی امداد لینے والی جماعت قرار پائی ہے، جلد ڈیکلریشن تیار کرکے سپریم کورٹ بھیجا جائے گا۔ وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ فارن فنڈنگ کیس کی تحقیقات ایف آئی اے کرےگا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں وفاقی کابینہ نےعمران خان اور دیگر قیادت کا نام ای سی ایل پر ڈالنےکی منظوری نہیں دی، پی ٹی آئی قیادت کا نام ای سی ایل پر ڈالنے کا معاملہ کابینہ کے ایجنڈے میں ہی نہیں تھا۔ذرائع کا کہنا ہےکہ وزیر قانون اور حکومتی قانونی ٹیم نے کابینہ کو الیکشن کمیشن فیصلے پر بریفنگ دی، ذرائع کے مطابق اس دوران وزیراعظم کی ہدایت پر سیکرٹری قانون اور سیکرٹری داخلہ کے علاوہ تمام بیوروکریٹس کو اجلاس سے باہر بھیج دیا گیا۔