ثاقب نثار سیاسی دکان چمکانے کیلئے عدالت لگاتے رہے، وزیراعظم

19 اپریل ، 2023

اسلام آ باد (نیوزرپورٹر،خصوصی نمائندہ ) وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار غریب کو انصاف کیلئے سیا سی دکان چمکانے کیلئے ہفتہ اتوار کو عدالت لگا تے تھے، صحت اور تعلیم کے میدان میں سیاست کی اجازت نہیں ہونی چاہیے ،اسے شجرممنوعہ ہونا چاہیے، سابق حکومت نے دوسرے منصوبوں کی طرح ہسپتالوں کوبھی نظر انداز کئے رکھا، عوامی خدمت ، تعلیم اور صحت کے شعبوں میں سیاست نہیں ہونی چاہئے،انسانیت کی خدمت اور مریضوں کو علا ج کی سہولیات مہیا کرنا بہت بڑی عبادت ہے، ہم سب کو مل کر غربت ، جہالت ، بے روزگاری ، بیماری کے خاتمے اور ملک کوقائد اور اقبال کا پاکستان بنانے کیلئے اکٹھے ہونا چاہیے۔ راولپنڈی انسٹیٹیوٹ آف یورالوجی اینڈ ٹرانپلانٹیشن کے افتتاح کے بعد گفتگوکرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ انہوں نے یورالوجی انسٹی ٹیوٹ کا معائنہ کیا ہے اور اس بات کی خوشی ہے کہ اسکے پہلے مرحلے میں آج سے باقاعدہ طور پر مریضوں کے بہترین علاج کا آغاز ہورہا ہے، ، اس اسپتال کی بنیاد 2009ء میں رکھی گئی تھی،2013ء کے بعد ہم نے اس کیلئے فنڈز مہیا کئے ، اب تک تقریباً5 ارب روپے خرچ ہوچکے ہیں، اس ہسپتال کو دکھی انسانیت کے علاج کیلئے اپنا کردار اد ا کرنا چاہئے تھا لیکن مجھے مجبور اًکہنا پڑتا ہے کہ سابق حکومت نے باقی منصوبوں کی طرح اس ہسپتال کو بھی نظر انداز کئے رکھا۔ اسی طرح لاہور میں پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ( پی کے ایل آئی) میں بھی جگر اور گردے کی پیوندکاری کے سیکڑوں مریضوں کے علاج کا انتظام کیا گیا لیکن سابق چیف جسٹس ثاقب نثارنے مجھ پر اس معاملہ میں20 ارب روپے ضائع کرنے کا الزام عائد کیا، وہ تو ہفتہ اور اتوار کو بھی عدالتیں لگاتے تھے لیکن کسی بیوہ اور غریب کو انصاف دینے کیلئے نہیں بلکہ سیا سی دکان چمکا نے کیلئے ۔ انہوں کڈنی اور لیور سنٹر لاہور کے بارے میں کہا کہ وہاں بیس ارب روپے غرق کر دیئے گئے لیکن انہوں نے قوم کو کیوں نہیں بتایا کہ یہ پیسے کیسے ہڑپ کئے گئے ؟۔ وزیراعظم نے کہا کہ اگر یہ 20 ارب روپے غرق ہوگئے تھے تو پھر کورونا میں پی کے ایل آئی کورونا کے مریضوں کے علاج یلئے ایک بڑا مرکز کیسے بن گیا تھا؟ وہاں پر 200 وینٹی لیٹرز مشینیں موجود تھیں اور اس انسٹی ٹیوٹ سے کورونا کے مریض دن رات شفا یاب ہورہے تھے۔قبل ازیں وزیراعظم نے گزشتہ روز راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف یورالوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن میں علاج کی سہولیات کے باقاعدہ آغاز کا افتتاح کر دیا ۔ وزیراعظم نے انسٹی ٹیوٹ کے مختلف شعبو ں کا معائنہ کیا اور علاج معالجہ کی سہولیات کا جائزہ لیا ۔