عمران خان سکون سےفیملی اور کارکنوں کے ساتھ عید منائیں،رانا ثناء

19 اپریل ، 2023

کراچی (ٹی وی رپورٹ)جیو کے پروگرام ’’آپس کی بات‘‘میں میزبان منیب فاروق سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ راناثناء نے کہا ہے کہ عمران خان سکون سےفیملی اور کارکنوں کیساتھ عید منائیں عدالت نےکہاہے عمران خان کو غیر قانونی طریقے سے ہراساں نہ کیا جائے، علی امین کو جن مقدمات میں گرفتار کیا گیا بتائیں کیا وہ غلط ہیں، زمان پارک میں عمران خان نے لوگوں بٹھایا ہوا تھا،علی امین گنڈا پور پر جو کیسز ہیں کیا انھوں نے وہ عمل اور باتیں نہیں کیں؟ قانونی طریقے سے عمران خان کو ہراساں کرنے کی ممانعت نہیں، گرفتاری کےبعدجتنے مسکین علی امین گنڈا پور نظر آئے توقعات کے برعکس ہے، عمران خان قانون کی بالادستی کی بات کرتے ہیں تو آئیں عدالت میں پیش ہوں،چاہتےہیں منی لانڈرنگ،فارن فنڈنگ توشہ خانہ کیس میں عمران خان پیش ہوں، عمران خان نے کسی کو گالی یا دھمکی دی ہے تو مقدمہ بنا ہے وہ اب کچھ افراد کیساتھ عدالتوں میں آئے ،پی ٹی آئی کے وکیل احمد اویس ایڈووکیٹ نے کہا کہ سپریم کورٹ الیکشن کیلئے اپنے احکامات پر عملدرآمد کروانے کیلئے زور دیگا، عدالتی احکامات پر عمل نہیں ہوا تو عوام میں سپریم کورٹ کی عزت و تکریم کو دھچکا پہنچے گا، ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد جہانگیر جدون نے کہا کہ انتخابات پنجاب کیساتھ خیبرپختونخوا میں بھی ہونے ہیں لیکن سمجھ نہیں آتا صرف پنجاب پر فوکس کیوں ہے، خیبرپختونخوا انتخابات پر سپریم کورٹ کہہ رہی ہے پشاور ہائیکورٹ جاکر اپنا کیس کریں ،رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ہمارے متعلق انہوں نے ضمناً بات کی ہے یہ اسٹیبلشمنٹ سے بات کرنے کی خواہش اپنے دل میں پالے رکھیں اور اسٹیبلشمنٹ سے پوچھیں کہ وہ ان کیساتھ بات کرنا چاہتی ہے یا نہیں ، سیاستدان جب بیٹھتے ہیں گفتگو کرتے ہیں تو راستے نکلتے ہیں انہوں نے گفتگو کا ڈائیلاگ کا راستہ نہیں اپنایا 2014ء سے عمران خان تکبر، جھوٹی انااور ضد کی بنیاد کے اوپرسیاست کرتا آرہا ہے اس نے یہ سمجھاکہ اس ضد ، ہٹ دھرمی، انا پرستی سے سب کو آگے لگا لوں گا انسانوں کا سمندر بھی اس نے لاکر دیکھ لیا ہے اب الیکشن وقت پر ہوں گے اور ہماری صوابدید پر ہوں گے بات بہت تفصیل سے ہے جو نیشنل سیکورٹی کمیٹی میں بھی بتائی گئی ،اس وقت پاکستان آرمی کی70 فیصد تعدادوہ تعینات ہے یہ کم از کم ایک مہینے کیلئے withdrawکرنا پڑیگا۔ اس وقت آرمی کی لیڈر شپ کے مطابق اسے withdraw کرنا ملکی مفاد میں نہیں ہے اگر چیف جسٹس حکومت سے تقاضا کرے اور کسی کے ذریعے وزیراعظم کو پیغام دے کہ آپکے ووٹوں کی وجہ سے میری تجویزرد ہوگئی ہے میں اس دوبارہ لا کے اسکو کامیاب یا انڈوز کرانا چاہتا ہوں تو یہ بات ایسی معمولی بات بھی نہیں ہے کہ وزیراعظم اس پر غور نہ کرے سابق آرمی چیف جنرل باجوہ نے یہ کہا تھا کہ چیف جسٹس صاحب یہ چاہتے ہیں اور ہمارا مشورہ ہے کہ آپ انکو ناراض نہ کریں ،ججز کی تقرری کا جو طریقہ کار ہے جوڈیشل کمیشن سے لے کر پارلیمانی کمیٹی اور ججزتقرری تک اس کو بالکل تبدیل کرنا چاہئے ،عمران خان دودفعہ اسلام آباد میں آئے ہیں اگر گرفتار کرنا ہوتا تو انہیں گرفتار نہیں کیا جاسکتا تھا ہم نے انکی گاڑی سے ہیروئن یا منشیات نکالنے کا کیس نہیں بنایا ہم صرف یہ چاہتے ہیں کہ یہ عدالت کا احترام کریں مقدمات میں پیش ہوں عدالت ان پر فرد جرم عائد کرے اگر یہ بے گناہ ہیں تو بالکل اپنے گھر جائیں اگر سزا ہو تو انکو کوٹ لکھپت جیل میں رکھا جائے گا،احمد اویس ایڈووکیٹ نے کہا کہ پاکستان کی بقاء و سا لمیت کیلئے آئین و قانون کی حکمرانی ضروری ہے، حکومت سپریم کورٹ کے آرڈرز پر عملدرآمد نہ کرنے کیلئے پارلیمنٹ کا تحفظ حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہے، پارلیمنٹ کیخلاف بطور ادارہ کارروائی نہیں ہوسکتی پارلیمنٹ اور سپریم کورٹ کے درمیان ٹکراؤ سے پاکستان کو بہت بڑا نقصان ہوگا۔