نگران حکومتیں جنرل الیکشن کی تکمیل تک برقرار رہیں گی، کنور دلشاد

19 اپریل ، 2023

اسلام آباد (رپورٹ حنیف خالد) وزارت دفاع سمیت حساس قومی اداروں نے سپریم کورٹ آف پاکستان کے سہ رکنی بنچ کو سربمہر لفافے میں جو درخواست پیش کی ہے اس کے نتیجے میں سپریم کورٹ آف پاکستان ریاست کے مفاد اور زمینی حقائق کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلہ کرے گی۔ یہ بات سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن آف پاکستان کنور محمد دلشاد نے منگل کی شب جنگ سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ نگران حکومتیں جنرل الیکشن کی تکمیل تک برقرار رہیں گی چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے اس حوالے سے دستاویزات چیف جسٹس مسٹر جسٹس عمر عطا بندیال کو پیش کی ہیں ایک سوال پر سابق سیکرٹری کنور محمد دلشاد نے کہا کہ 14 مئی 2023 کو پنجاب میں جنرل الیکشن کرانے کے 4 اپریل 2023 کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے متعلق چیف الیکشن کمشنر کی دستاویزات کو ملحوظ رکھ کر آرڈر جاری کرنے کی مجاز ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل۔224 کے تحت نگران حکومتوں کی جگہ ایڈمنسٹریٹر مقرر کرنے کا کوئی تصور نہیں ہے۔ سپریم کورٹ آف پاکستان ایڈمنسٹریٹر مقرر کرنے کی پی ٹی آئی کے عہدیدار فواد چوہدری کی اس تجویز کو خاطر میں نہیں لائے گی کیونکہ آئین میں اس کی قطعاً گنجائش نہیں ہے۔ سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن آف پاکستان نے کہا کہ چیف جسٹس آف پاکستان سے وفاقی سیکرٹری دفاع، ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی، ڈائریکٹر جنرل ملٹری انٹیلی جنس اور ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشن کی 17 اپریل 2023 کو مسلسل اڑھائی گھنٹے دورانیے کی ملاقات انتہائی اہم ہے اس کے ساتھ ساتھ پنجاب اور سندھ کے کچے کے علاقوں میں ڈاکوئوں، دہشتگردوں کے خلاف پنجاب کے پندرہ ہزار پولیس اہلکار اور سندھ کے بھی ہزاروں پولیس کے جوان بمعہ فوجی دستوںکا آپریشن ڈاکوئوں کا مکمل صفایا کرنے کیلئے جاری ہے اس کی نگرانی پنجاب کے وزیراعلیٰ محسن نقوی اور آئی جی پنجاب ڈاکٹر عثمان انور بنفس نفیس کر رہے ہیں۔ سپریم کورٹ آف پاکستان کچے کے علاقوں میں ڈاکوئوں کے خلاف جو آپریشن ہو رہا ہے اسے بھی ملحوظ نظر رکھے گی۔