گیس کمپنی اپنے عملہ کی بےقاعدگیوں کیخلاف کارروائی کرے، گورنر

02 جون ، 2023

کوئٹہ (خ ن)گورنر بلوچستان ملک عبدالولی خان کاکڑ نے کہا کہ عوام کو قدرتی گیس کی بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے تمام غیرقانونی کنکشنز اور کمپریسرز لگانے جیسے اقدامات کی روک تھام کی جائے اور اس سلسلے میں خود سوئی سدرن گیس کمپنی اپنے عملہ کی بےقاعدگیوں کو دور کرنے کیلئے کاروائی کرے. ان خیالات کا اظہار انہوں نے سوئی سدرن گیس کمپنی کے ایم ڈی عمران مانیارکے ساتھ ملاقات میں بات چیت کرتے ہوئے کیا. اس موقع پر گورنر بلوچستان نے اس بات کی بھی نشاندہی کی کہ گیس کے ذخائر مسلسل کم ہو رہے ہیں لہٰذا اس کے استعمال کے ساتھ ساتھ متبادل ذرائع کی تلاش پر بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے. انہوں نے کہا کہ موجودہ وسائل کو بہتر طور پر استعمال کرنے اور غیرقانونی کنکشن کو کاٹنے اور گیس کی چوری کو روکنے کیلئے موثر اقدامات کئے جائیں۔ درایں اثناءگورنر بلوچستان ملک عبدالولی خان کاکڑ نے قدرتی آفات اور خاص طور پر حالیہ سیلاب سے متاثر ہونے والوں کی موثر امداد پر عالمی اداروں بالخصوص آئی آر سی کے کردار کو سراہا اور ان کا شکریہ ادا کیا. انہوں نے کہا کہ بلوچستان ایک غریب صوبہ ہے اور ہمارے لیے اپنے وسائل سے قدرتی آفات، ٹریفک حادثات اور دیگر واقعات میں جان بحق اور زخمی ہونے والوں کی امداد اور بحالی انتہائی مشکل کام ہے اور اس سلسلے میں بین الاقوامی اداروں کا تعاون انتہائی اہمیت کا حامل ہے. ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز گورنر ہاوس کوئٹہ میں آئی آر سی کے سربراہ نیکولاس لمبرٹ کی قیادت میں وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا. اس موقع پر بی آر ایس پی کے نمائندے کے بھی موجود تھے. گورنر بلوچستان نے کہا کہ بلوچستان میں مہلک امراض بھی بہت زیادہ ہیں اور مقامی سطح پر ان سے نمٹنے کی صلاحیت اور وسائل کی کمی سے بھی ہم دوچار ہیں. انہوں نے سیلاب سے متاثرین کی مدد پر عالمی ریڈ کراس اور بی آر ایس پی کا شکریہ ادا کیا اور وفد سے کہا کہ وہ اس غریب صوبے میں مہلک امراض کے علاج معالجہ اور ان کے تدارک میں تعاون کریں۔