سندھ کی 54 فیصدآبادی بجلی سے محروم ،صوبائی اسمبلی میں انکشاف

08 جون ، 2023

کراچی ( نمائندہ جنگ) سندھ اسمبلی ،صوبے کی 54 فیصدآبادی بجلی سے محروم ہے، پیپلز پارٹی کے دور میں8572 گاوں کو بجلی دی گئی جن کا ڈیٹا موجود ہے،تفصیلات کے مطابق سندھ کے وزیر توانائی امتیاز احمدشیخ نے بدھ کو سندھ اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران محکمہ تونائی سے متعلق وقفہ سوالات کے دوران ارکان کے مختلف تحریری اور ضمنی سوالوں کا جواب دیتے ہوئے بتایا کہ حکومت سندھ صوبے کے ہر گاؤں میں بجلی مہیا کرناچاہتی ہے پیپلز پارٹی کے دور میں8572 گاوں کو بجلی دی گئی جن کا ڈیٹا موجود ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ گاوں کی تعداد ریونیو ڈیپارٹمنٹ جمع کرتا ہے ،اس پر ورلڈ بینک نے بھی اسٹڈی کرائی تھی۔انہوں نے کہا کہ54 فیصدآبادی بجلی سے محروم ہے۔اس کا سروے ہونا چاہیے کہ کتنے گاوں ایسے ہیں جہاں بجلی نہیں ہے۔ہم نے اپنی کوشش کی ہے بورڈ آف ریونیو کو لکھا بھی ہے۔روزانہ گاوں کی تعداد بھی بڑھتی جارہی ہے۔اس موقع پر ایم ایم اے کے رکن سید عبد الرشید نے سوال کیا کہ جب 54 فیصد سندھ میں بجلی نہیں ہے تو آپ 15 سال سے اقتدارِ میں کیاکر رہے ہیں؟۔ صوبائی وزیر امتیاز شیخ نے کہا کہ اس وقت دیہاتوں کوجتنی بھی بجلی مل رہی ہے یہ ہماری حکومت نے ہی دی ہے۔اب ہم سولرائز کی طرف بھی گئے ہیں ،ان پر اخراجات کی تفصیلات بھی ایوان میںدیں گے۔