غیرعلاقائی عناصر کے افغانستان میں متحرک ہونے پر روس کا اظہار تشویش

01 اکتوبر ، 2023

ماسکو ( مانیٹرنگ ڈیسک ) روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کاکہنا ہے کہ افغانستان اور اس کے گرد و نواح میں غیرعلاقائی عناصر کی بڑھتی ہوئی کارروائیوں پر تشویش ہے۔افغانستان پر ماسکو فارمیٹ کے ایک روزہ اجلاس میں روس، چین، پاکستان، ایران کے نمائندے اور طالبان کے قائم مقام وزیر خارجہ امیر خان متقی شریک ہوئے۔اجلاس میں افغانستان میں غیر علاقائی عناصر کی بڑھتی شمولیت پر روس نے تشویش کا اظہار کیا،اس موقع پر روسی نمائندہ خصوصی کا کہنا تھا کہ طالبان دہشت گرد گروہوں اور خاص طور داعش کا مقابلہ کرنے میں غیرمؤثر ،شدید اقتصادی مسائل کا حل تلاش کرنے میں ناکام رہے ہیں ، نسلی گروہوں کی شمولیت کے بغیر افغانستان میں امن ممکن نہیں، طالبان کو تسلیم کرنا جامع حکومت کے قیام کی بنیاد پر ہوسکتا ہے، انہوں نے کہا کہ واشنگٹن کا افغان بینک کے اثاثوں کو منجمد کرنا نقصان دہ ہے ۔افغان وزیرخارجہ نے کہا کہ دیگر ممالک بھی چین کی طرح اپنے سفیر کابل میں بھیجیں۔اجلاس کے اختتام پر جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ فریقین نے افغانستان میں دہشت گردوں بالخصوص داعش کی بڑھتی ہوئی کارروائیوں سے پیدا ہونے والی سکیورٹی کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔