وفاق کا افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے ذریعے پر تعیش اشیاء کی درآمد پر پابندی کا فیصلہ

01 اکتوبر ، 2023

اسلام آباد(این این آئی) وفاقی حکومت نے افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے ذریعے پرتعیش اشیاء کی درآمدپر پابندی عائد کرنے کافیصلہ کر لیا۔ ٹائرز، فیبرکس، کاسمیٹکس اور ٹائلز سمیت متعدد اشیا کی درآمد پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزارت تجارت نے افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے زریعے درآند کیے جانے والی لکژری اشیا پر پابندی عائد کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق صرف ایک سال میں افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کا حجم 2.5ارب ڈالر اضافے سے 6.71ارب ڈالر ہوگیا ہے۔ افغان ٹرانزٹ ٹریڈ نے پاکستان کی جانب سے درآمد پر پابندی کے اثرات کوزائل کردیا ہے۔اس حوالے سے بتایا گیا کہ جن اشیا کی درآمد پر پابندی یا ڈیوٹی بڑھائی جاتی ہے وہی اشیا ٹرانزٹ ٹریڈ کے ذریعے منگوائی جارہی ہیں، افغانستان میں ڈیوٹی کم ہونے کے باعث بیشتر اشیا اسمگلنگ کے ذریعے پاکستان میں فروخت کردی جاتی ہیں۔ذرائع کے مطابق وزارت تجارت نے ریوالونگ انشورنش اور بینک گارنٹی اشیا کی 100 فیصد مالیت پروصول کرنے کی سفارش کردی ہے اور ایف بی آر کو اففان ٹرانزٹ ٹریڈ پر 10فیصد پراسینگ فیس بھی عائد کرنے کی سفارش بھی کی گئی ہے۔