برطانوی سفارت کاروں کے اہل خانہ اسرائیل چھوڑ رہے ہیں

13 اکتوبر ، 2023

لندن (پی اے) فارن آفس کا کہنا ہے کہ برطانوی سفارت کاروں کے اہل خانہ احتیاطی اقدام کے طور پر اسرائیل چھوڑ رہے ہیں۔ اس نے مزید کہا کہ برطانوی سفارت خانہ کھلا رہے گا اور ان لوگوں کو قونصلر خدمات فراہم کرتا رہے گا، جنہیں مدد کی ضرورت ہے۔ اسرائیل اور فلسطین کی کشیدہ صورت حال میں برطانوی حکومت اپنے شہریوں کو اسرائیل کے تمام غیر ضروری سفر کے خلاف مشورہ دیتی ہے اور دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ اس نے اس مشورے کے مطابق سفارت کاروں کے زیر کفالت افراد کے بارے میں اپنا فیصلہ کیا ہے۔ فارن سیکرٹری جیمز کلیورلی نے بدھ کے روز اسرائیل کا دورہ کیا، جہاں انہوں نے کہا کہ برطانیہ اس کے ساتھ غیر متزلزل یکجہتی کا اظہار کرتا ہے۔ اس اشارے کے درمیان کہ اسرائل غزہ میں زمینی فوجی کارروائیاں کرنے کا ارادہ رکھتا ہے تو انہوں نے کہا کہ اسرائیل کو اپنے دفاع کا حق حاصل ہے لیکن ہم عام شہریوں کی کم سے کم ہلاکتوں کو دیکھنا چاہیں گے۔