پنجاب، مختلف شہروں میں اساتذہ کا احتجاج جاری، 100 سے زائد گرفتار،طلبہ بھی مظاہروں میں شریک حافظ آباد میں موٹر وے بند کردی

13 اکتوبر ، 2023

لاہور(خبرنگار،نمائندگان جنگ )پنجاب بھر میں سکول و کالج اساتذہ کااپنےحقوق کیلئے احتجاج جاری ہے،100سے زائد مظاہرین کو گرفتار کرکے پرچے کاٹ دیئےجبکہ طلبہ بھی احتجاج میں شریک ہو گئے ۔لاہور کے ضلع بھر کے سرکاری تعلیمی اداروں میں تالا بندی اور اساتذہ کی ہڑتال کے باعث درس و تدریس کا سلسلہ ٹھپ رہا،لاہور میں پولیس نے شرکا کے موبائل فون ڈیٹا سے بھی لوکیشن ٹریس کرنا شروع کر دی ہے جو ریڈار پر آئے گا اسے گرفتار کیا جائے دھرنے کے شرکاء کا کہنا ہے کہ دھرنے میں شریک خواتین کو بھی گرفتار کیا گیا ،کئی اساتذہ سمیت گریڈ 1سے گریڈ 18تک کے ملازمین تا حال کس تھانے میں ہیں کچھ معلوم نہیں۔حافظ آباد میں طلبہ نے موٹروے بند کردی، اساتذہ نے آج سے کلاسز کا مکمل بائیکاٹ کرنے کا اعلان کردیا، مرد اساتذہ کے ساتھ ساتھ خواتین اساتذہ کو بھی پولیس نے گرفتارکر لیا، مظاہرین پر لاٹھی چارج اور دیگر طریقوں سے بھی سخت برتائو کیا گیا۔ جبکہ واٹر کینن بھی دن بھر سیکرٹریٹ کے قریب موجود رہی۔فیصل آباد ، سیالکوٹ ، گجرات ، پاکپتن، اوکاڑہ، سرگودھا، جہلم، گوجرانوالہ، قصور، ساہیوال،خوشاب، منڈی بہاءالدین، ملکوال، گگومنڈی، مریدوالا،کمالیہ،پنڈ ی بھٹیاں ودیگر شہروں میں بھی اساتذہ نے احتجاج کیا اور ڈی سی آفس کے سامنے دھرنے دیئے ۔