عوامی مینڈیٹ کا احترام، اتحاد نہیں کریں گے، متنازع حلقوں میں دوبارہ گنتی نہیں ہوئی تو اپوزیشن میں بیٹھیں گے، تحریک انصاف

12 فروری ، 2024

اسلام آباد (نمائندہ جنگ/جنگ نیوز) تحریک انصاف کے سینئر رہنما بیرسٹر گوہر علی خان نے کہا ہے کہ عوام نے بانی پی ٹی آئی عمران خان کے ”غلامی نامنظور“ کے ویژن پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے‘ عوام کے مینڈیٹ کا احترام کیاجائے‘ فیصلہ تسلیم کرنے کی بجائے قوم کا مینڈیٹ چرانے اور جمہوریت پر شب خون مارنے کی ناقابل قبول کوشش کی جارہی ہے ‘ ووٹ کی بے حرمتی گوارا نہیں کریں گے‘خیبرپختونخوا، پنجاب اور وفاق میں کسی سے اتحاد نہیں ہوگا ‘متنازع حلقوںمیں دوبارہ گنتی نہ ہوئی تو اپوزیشن میں بیٹھیں گے‘ حکومت سازی تحریک انصاف کا بنیادی دستوری و جمہوری حق ہے‘ خیبر پختونخوا میں وزیر اعلی کےلیے ابھی تک کوئی نام فائنل نہیں ہوا‘منگل تک فیصلہ ہوجائے گا‘ارکان سے کوئی حلف نامہ اور استعفیٰ نہیں مانگا۔اس مرتبہ پارلیمان میں خریدو فروخت کا راستہ روکیں گے۔ہماری بات چیت چل رہی ہے ایک دو دن میں فیصلہ ہوجائے گا کس جماعت کو جوائن کرنا ہے۔ہمیں مخصوص نشستیں بھی مل جائیں گی۔ ہم نے جماعت اسلامی سے کوئی رابطہ نہیں کیا۔ جیونیوز سے گفتگوکرتے ہوئے بیرسٹر گوہر کاکہناتھاکہ وسیم قادر کی ن لیگ میں شمولیت کی خبر ابھی آئی ہے اس کو دیکھیں گے۔وسیم قادرسے کوئی رابطہ نہیں ہوا ۔ باقی سارے امیدوار پارٹی سے رابطے میں ہیںاور ہمارے ساتھ ہی رہیں گے۔ہم کسی بھی پارٹی کو جوائن کرسکتے ہیں ضروری نہیں کہ وہ پارلیمان میں ہو۔انہوں نے کہاکہ 70نشستوں پر معاملہ متنازع ہے۔ہم ہوا میں دعویٰ نہیں کررہے ہمارے پاس شواہد موجود ہیں ۔ الیکشن کمیشن ریٹرننگ افسران کو آج ہی بلائے اور مخصوس پولنگ اسٹیشن کے نتائج منگوائے۔ الیکشن کمیشن کو نظر نہیں آرہا کہ دیوار پر کیا لکھا ہے۔اگر دوبارہ گنتی نہیں کی جاتی تو اپوزیشن میں بیٹھیں گے۔ علاوہ ازیں اپنے بیان میں بیرسٹرگوہر کا کہناہے کہ عوام نےتحریک انصاف کو واضح اور شفاف مینڈیٹ سے نوازا ہے۔ فیصلے کے سامنے سرتسلیم خم کرنے کی بجائے پھر سے ریٹرننگ افسران کے ذریعے ان کا مینڈیٹ چرانے کی کوشش کی جارہی ہے۔