جلاؤ گھیراؤ کیس ،اسپیشل پراسیکوٹر نے بانی PTIکو 9مئی واقعات کا مرکزی ملزم قرار دیدیا

02 مارچ ، 2024

لاہور (آئی این پی) لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت میں جلاؤ گھیراؤ کیس کے مقدمات میں بانی پاکستان تحریک انصاف کی عبوری ضمانتوں کی درخواست پر سماعت کے دوران اسپیشل پراسیکیوٹر رانا شکیل نے سابق وزیر اعظم کو 9مئی واقعات کا مرکزی ملزم قرار دیدیا۔انہوں نے کہا کہ گواہوں کے بیانات موجود ہیں کہ بانی پی ٹی آئی نے پارٹی کے دیگر رہنماؤں کو سرکاری تنصیبات جلانے اور عوام کو سڑکوں پر نکلنے کا کہا تھا۔ انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد جاوید نے 9مئی جلاؤ گھیراؤ کے 7مختلف مقدمات میں بانی پی ٹی آئی کی عبوری ضمانتوں پر سماعت کی۔دوران سماعت اسپیشل پراسیکیوٹر رانا شکیل نے پرائم منسٹر ہاؤس جلانے کے کیس میں اپنے دلائل مکمل کر لیے، جس میں انہوں نے کہا کہ بانی پی ٹی آئی مرکزی ملزم ہے ، گواہوں کے بیانات موجود ہیں ۔بانی پی ٹی آئی نے پارٹی کے دیگر رہنماؤں کو سرکاری تنصیبات جلانے کا کہا ہے، بانی پی ٹی آئی نے عوام کو سڑکوں پر بھی نکلنے کا کہا تھا۔ اسپیشل پراسیکیوٹر نے عدالت میں گواہوں کے بیانات پڑھ کر سنائے ۔عدالت نے استفسار کیا کہ کیا بانی پی ٹی آئی نے عوام کو اداروں کے خلاف حملہ کرنے کا کوئی ٹوئٹ کیا ، جس پر اسپیشل پراسیکیوٹر نے بتایا کہ جی ہاں بہت سے ٹوئٹس اور انسٹاگرام پر پیغامات ہیں ۔ بانی پی ٹی آئی نے عوام کو سڑکوں پر نکلنے کا کہا ۔بعد ازاں عدالت نے سماعت ملتوی کردی۔واضح رہے کہ عدالت نے جیل سے بانی پی ٹی آئی کی ویڈیو لنک پر حاضری لگوانے کی ہدایت کررکھی ہے اور بانی پی ٹی آئی کے وکلا سے دلائل بھی طلب کررکھے ہیں ۔بانی چیئرمین پی ٹی آئی کے خلاف جناح ہاؤس، عسکری ٹاور جلاؤگھیراؤ سمیت 7مقدمات درج ہیں۔