چیف جسٹس ایک دبنگ آدمی ہیں،ہم امید کرتے ہیں انصاف ہو گا ،عمران خان

18 مئی ، 2024

اسلام آباد (خبر نگار) بانی پی ٹی آئی عمران خان نے کہا ہے کہ چیف جسٹس ایک دبنگ آدمی ہیں،ہم امید کرتے ہیں کہ انصاف ہو گا جنگل کے بادشاہ نے سارے نظام پر قبضہ کیا ہوا ہے ، یہاں وہی قانون ہے جو جنگل کا بادشاہ کہتا ہے ، سارا نظام جھوٹ پر مبنی ہے ، عام آدمی کا نظام انصاف سے اعتماد اٹھ چکا ہے ، جھوٹ کو بچانے کیلئے ججز اور میڈیا پر دبائو بڑھایا جا رہا ہے ، یہ لوگ صرف ایک آدمی سے اس قدر خوفزدہ ہیں کہ اسکی تصویر نشر کرنے سے بھی ڈرتے ہیں ، شاہ محمود قریشی اور پرویز الہٰی جیسے بڑے سیاستدان آج کہہ دیں کہ تحریک انصاف چھوڑ رہے ہیں تو جیل سے نکل جائیں گے ، فارم 47 والوں سے کوئی مذاکرات نہیں کریں گے۔گزشتہ روز پی ٹی آئی کے مرکزی میڈیا ڈیپارٹمنٹ نے اڈیالہ جیل سے بانی چیئرمین عمران خان کا خصوصی پیغام جاری کیا جس میں بانی پی ٹی آئی نے کہا کہ جس طرح سے پاکستان میں ڈنڈے سے جمہوریت چلائی جا رہی ہے یہ جمہوریت کی تضحیک ہے،اس وقت ملک دو حصوں میں بٹا ہو ا ہے، ایک فارم 47 والے جنہیں فارم 47 کے ذریعے جتوایا گیا اور اقتدار سونپا گیا،دوسری جانب فارم 45 والے ہیں جن پر ہر قسم کا ظلم اور تشدد کیا گیا، جعلی جھوٹے نظام سے ملکی سالمیت کو خطرہ لاحق ہے،اشرافیہ نے ملک پر قبضہ کر رکھا ہے، فارم 47 والوں سے کوئی مذاکرات نہیں کریں گے، چیف جسٹس ایک دبنگ آدمی ہیں،ہم امید کرتے ہیں کہ انصاف ہو گا، دریں ا ثناء عمران خان نے اڈیالہ جیل میں 190 ملین پائونڈز ریفرنس کی سماعت کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے آرمی چیف کو خط اپنی ذات کیلئے نہیں بلکہ ملک کیلئے لکھوں گا، مس کنڈکٹ پر جج ابو الحسنات اور جج قدرت اللہ کے خلاف ریفرنس فائل کرنے کا کہا ہے۔