وزیراعظم نے پیکا ایکٹ ترمیمی بل ڈرافٹ پر اتفاق رائے کیلئے 8 رکنی کمیٹی قائم کردی

21 مئی ، 2024

اسلام آ باد (رانا غلام قادر )وزیر اعظم شہبا ز شریف نے انسداد الیکٹرانک کرائمز ایکٹ( پیکا ایکٹ )2016میں تجویز کی گئی ترامیم کا جائزہ لینے اور اس تر میمی بل کے ڈرافٹپر اتفاق رائے کیلئے 8 رکنی کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔کمیٹی ان ترامیم پر اتفا ق رائے پیدا کرے گی جو کابینہ کی قانون سازی سے متعلق کمیٹی نے تجویز کی ہیں۔ان ترامیم کا مقصد سوشل میڈیا کو ریگولیٹ کرنا اور پرائیویسی کے تحٖط کو یقینی بنا نا ہے۔ کمیٹی میں وزیر اعظم کے مشیر برائے سیا سی امور رانا ثنا ء اللہ ‘ وزیر قانون و انصاف سنیٹر اعظم نذیر تارڑ ‘ وزیر اطلاعات و نشریات عطا ء اللہ تارڑ ‘ وزیر تعلیم وتربیت خالد مقبول صد یقی ‘ وزیر مملکت برائے آئی ٹی و ٹیلی کام شزہ فاطمہ خواجہ ‘ رکن قومی اسمبلی نوابزادہ خالد حسین مگسی ‘سنیٹر شیری رحمان اور اٹا رنی جنرل آف پا کستان کو شامل کیا گیاہے۔ کمیٹی کسی اور ممبر کو بھی آپٹکرسکتی ہے۔