سری لنکا ، مظاہرین ایوان صدر کے قریب جمع، ایمرجنسی نافذ، فوج طلب

03 اپریل ، 2022

کولمبو(این این آئی)سنگین اقتصادی بحران سے دوچار سری لنکا میں ہزاروں افراد نے صدر گوٹابایا راجاپکسے سے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے پرتشددمظاہرے کیے۔ پولیس نے صورت حال پر قابو پانے کے لیے کولمبو میں غیر معینہ مدت کے لیے کرفیو نافذ کردیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پانچ ہزار سے زائد مظاہرین دارالحکومت کولمبو میں ایوان صدر کے قریب جمع ہوگئے۔ مظاہرین پر قابو پانے کے لیے نیم فوجی دستے طلب کرلیے گئے جس کے بعد سکیورٹی فورسز اور مظاہرین میں تصادم کے نتیجے میں کم از کم ایک زخمی شخص کی حالت نازک ہے۔اس حوالے سے پولیس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ پرتشدد مظاہروں کے بعد ایک خاتون سمیت کم از کم 45 افراد کو گرفتار کرلیا گیا جبکہ ایک اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ پولیس سمیت پانچ پولیس افسران زخمی ہوگئے جنہیں ہسپتال میں داخل کرایا گیا ۔حکومت کا الزام ہے کہ مظاہروں کا اہتمام ایک انتہاپسند گروپ نے کیا تھا۔ حکومت کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے تشدد کو ہوا دینے والے بیشتر افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔